Subh Savaray Pakistan | Pakistan's Olive Oil Industry | Part 6 | 28 October 2020 | 92NewsHD

#92NewsHD Live, Pakistan’s first HD Plus information channel brings you the crispiest reside information, headlines, delineate and related updates, present affairs, viral information, trending information, faith, sports activities, way of life, leisure, well being, climate, generation, industry, morning display, a variety of top elevating political communicate presentations together with MUQABIL, HARD TALK PAKISTAN, SUBH-E-NOOR, SUBH SAVARAY PAKISTAN, NEWS @ 5, 92 At 8, CROSS TALK, NIGHT EDITION, HO KYA RAHA HAI and a lot more to seem ahead.

92 News HD Programs:
• 92 Headlines –
• Muqabil –
• Hard Talk Pakistan-
• 92 At 8 –
• Night Edition –
• subh e noor –
• Ho Kya Raha Hai –
• NewsAt5 –
• SUBH SAVARAY PAKISTAN –
• Cross Talk –

Team Members:
Nazir Ahmed Ghazi | Arif Nizami | Asad Ullah Khan | Saadia Afzaal | Sarwat Valim | Haroon Ur (*28*) | Sohail Iqbal Bhatti | Faisal Abbasi | Shazia Akram | Irshad Arif | Moeed Pirzada

Subscribe Our Youtube Channel:

Visit our Website:
Follow us on Twitter:
Like us on Facebook:
Subscribe us Dailymotion:

#92NewsHD
#LIVE
#HEADLINES
#BULLETINS
#News
#92NewsLive
#Pakistan
#HD

Subscribe to Channel:

This video by means of 92 News HD was once seen 76063 and preferred: 1685 occasions

If you prefer this video, please support their channel by means of liking and subscribing.

Subscribe Here

Advertisements
728 90 Olive Oil Brands Banner Ads 9 - Subh Savaray Pakistan | Pakistan's Olive Oil Industry | Part 6 | 28 October 2020 | 92NewsHD

39 thoughts on “Subh Savaray Pakistan | Pakistan's Olive Oil Industry | Part 6 | 28 October 2020 | 92NewsHD”

  1. ڈاکٹر طارق کی تمام باتیں معلوماتی تھیں۔ مگر پروگرام کا وقت مختصر تھا۔ کیا ڈاکٹر صاحب کے ساتھ کوٸ اور نشست بھی ھوٸ ھے؟ ھم ڈاکٹر صاحب کو اس ٹاپک پر سننا چاہتے ہیں۔ تاکہ انکے علم اور تجربے سے فایدہ اٹھاییں۔

  2. صوبہ سندھ میں ضلعہ دادو کے ایک مشہور ٹوئرسٹ پوائنٹ گورکھ ھِل اسٹیشن پر زیتون کے قدرتی باغات موجود ہیں مگر مقامی لوگوں کو ان کے فوائد کا کچھ پتا نہیں اس وجہ وہ ان سے زیتون حاصل نہیں کرتے اور نا ہی حکومت کی طرف سے زیتون کے ان قدرتی باغات پر کوئی توجہ دیا جا رہا ہے ورنہ پاکستان میں ہزاروں ٹن زیتون تو صرف ضلعہ دادو کے گورکھ ھِل اسٹیشن سے ہر سال حاصل کیئے جائیں جن سے کروڑوں ڈالرز کا منافعہ کمایا جا سکتا ہے حکومت لو چاہیئے کے زیتون کے ان قدرتی باغات کو کام میں لایا جائے اور ان سے زیتون حاصل کیئے جائیں ساتھ ساتھ اس علائقے کی ترقی پر بھی دھیان دیا جائے نئے روڈ بنائے جائیں اسکول ہسپتال کالیج اور ایک یونیورسٹی بھی کیونہ گورکھ ھِل اسٹیشن سندھ کی ایک بہت ہی خوبصورت ٹوئرسٹ پوائنٹ ہے جہاں کی موسم اور آبھوا کا کوئی جواب نہیں. ایک بات اور بھی بتاتا چلوں کے گورکھ ھِل اسٹیشن پر موسم کے حصاب سے اخروٹ ، بادام ، انجیر ، سیب ، آلوبخارہ ، آڑو ، انگور اور بناسپتی کے باغات بھی لگ سکتے ہیں جن سے الگ کروڑوں ڈالرز کا منافعہ حاصل کیا جا سکتا ہے

  3. اللہ کے بندوپاکستانیوں اس کو اگا کر صرف پیسے ہی نہ کماؤ بلکہ قوم کو سستے دام بھی آسانی فراہم کرو تاکہ قوم کی اکثریت دل کے اور شوگرکے امراض میں منتلا ہو رہی ہے، اگر اسکا تیل ہر پاکستانی کو میسر اجائے، تو ملک کا ہر فرد طاقتور قوم مین تبدیل ہو سکتا ہے۔ اللہ کے واسطے اس بات پر توجہ دو۔ بس

Leave a Comment

Your email address will not be published.

Scroll to Top